پشاور – پشتون تحفظ مومنٹ کے سربراہ منظور پشتین نے کراچی میں پی ٹی ایم کے احتجاجی دھرنے سے ٹیلی فونگ خطاب میں پاکستانی سرکار پر زور دیا کہ پی ٹی ایم کے گرفتار رہنماؤں اور کارکنوں کو رہا کیا جائے ۔

پی ٹی ایم نے عالمزیب محسود کی گرفتاری کے بعد 24 جنوری سے کراچی میں احتجاجی دھرنا دیا ہے ۔

مظاہرین کے مطالبات میں عالمزیب محسود سمیت تحریک کے تمام کارکنوں کی رہائی اور خیسورہ واقعہ کی شفاف تحقیقات کے مطالبات شامل ہیں ۔

منظور پشتین نے کہا کہ پی ٹی ایم کے پلٹ فارم سے سیندھی ، بلوچ اور مہاجر قومیتوں سے تعلق رکھنے والے تمام لاپتہ افراد کی بازیابی کے لئے آواز اٹھایا جائے گا۔

اج 27 جنوری کو منظور پشتین کی خطاب کو سننے کے لئے دیگر دنوں کے مقابلے میں احتجاجی دھرنے کے پینڈال میں زیادہ لوگ جمع ہوئے تھے ۔

مہاجر قومیت کے سینکڑوں سیاسی کارکنوں نے آج پی ٹی ایم کے احتجاجی دھرنے میں شرکت کیا آور پی ٹی ایم کے تمام مطالبات کی حمایت کی ۔

منظور پشتین نے دھمکی دی کہ اگر کراچی دھرنے کے نتیجے میں تحریک کے گرفتار کارکنوں کو رہا نہ کیا گیا تو اسلام آباد میں ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ منعقد کرکے دمہ دم مست قلندر کرنے سے پاکستانی سرکار کی نیند کو حرام کرینگے۔

جبکہ دوسری طرف پاکستانی سرکار نے وزیرستان سے تعلق رکھنے والے پی ٹی ایم کے سات کارکنوں کو مردان سے گرفتار کرکے جیل بھیج دیئے ہیں ۔

گرفتار ہونے والو میں عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے لیکچرار اور پی ایچ ڈی طلبہ شامل ہیں ۔

پی ٹی ایم کے گرفتار کارکنوں کو مردان کے ایک مقامی عدالت میں پیش کیا رہا ہے ۔ پاکستانی سرکار نے یونیورسٹی لیکچرر اور طلبہ کو ہتھکڑیاں پہنائی ہیں ۔

پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما فرحت اللہ بابر نے کہا کہ رینجرز اور دیگر اداروں نے کراچی میں پی ٹی ایم کے کارکنوں کو گرفتار کرنے سے یہ ظاہر کرنے کی کوشش کی کہ گویا پیپلز پارٹی بھی پی ٹی ایم کے خلاف ہے ۔ حالانکہ ایسا بالکل نہیں ۔

جبکہ دوسری طرف پیپلز پارٹی کے مرکزی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے پی ٹی ایم کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کو ظاہر کرتے ہوئے پی ٹی ایم کے گرفتار کارکنوں کو رہا کروانے کے لئے اپنی خرچ پر ایک وکیل بھی فراہم کیا ہے جو پی ٹی ایم کے وکلاء کے ساتھ مل کر عالمزیب محسود اور دیگر کارکنوں کے لئے عدالت میں قانونی جنگ لڑ رہا ہے  ۔

احتجاجی دھرنے میں شریک غیر پشتونوں کو منظور پشتین نے اردو زبان میں مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تمام مظلوم قوموں کے درمیان اتفاق اور اتحاد کی ضرورت ہے ۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی ایم سیندھی  مہاجر اور بلوچ لاپتہ افراد کے مسئلہ پر خاموش نہیں رہے گی ۔

Comments